سندھ سے 530 افغان باشندے سزاپوری ہونے پر رہا،حکومت کاڈی پورٹ کرنیکافیصلہ

اسلام آباد (نیوزڈیسک)پاکستان میں غیر قانونی طور پر مقیم افغان باشندوں کو سزا پوری ہونے کے بعد ڈی پورٹ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔سندھ کی مختلف جیلوں سے سزا پوری ہونے کے بعد 530 افغان باشندوں کو رہا کردیا گیا ۔ اس حوالے سے جاری دستاویز کے مطابق رہا ہونے والے تمام افغان قیدی اپنی سزائیں پوری کرچکے ہیں۔800 افغان قیدی اب بھی سندھ کی مختلف جیلوں میں قید ہیں۔ پولیس افسران کو حکم دیا گیا ہے کہ افغان قیدیوں کی کسٹڈی لے کر انہیں چمن بارڈر پر لے جائیں۔محکمہ داخلہ سندھ نے ہدایت کی کہ کراچی میں افغان قونصلیٹ کو بھی افغان شہریوں کو ڈی پورٹ کرنے سے متعلق آگاہ کیا جائے۔دستاویزات کے مطابق حیدر آباد جیل سے 169 افغان مردوں کو رہا کیا گیا ، کراچی جیل سے 148 افغان باشندوں کو رہا کیا گیا ہے، کراچی اور حیدر آباد جیل سے کُل 317 افغان قیدیوں کو رہا کیا گیا ۔دستاویزات کے مطابق کراچی اور حیدر آباد کی بچہ جیل سے 41 بچوں کو رہا گیا ، کراچی ویمن جیل سے 56 اورحیدر آباد ویمن جیل سے 32 افغان خواتین قیدیوں کو رہا کیاگیا، کراچی اور حیدر آباد کی ویمن جیلوں سے 84 بچوں کواپنی ماؤں کے ساتھ رہا کیا گیا۔اس کے علاوہ 800 افغان قیدی ابھی سندھ کی مختلف جیلوں میں قید ہیں۔ رہا ہونے والے تمام قیدی اپنی سزائیں پوری کرچکے ہیں، تمام افراد کو مختلف عدالتوں سے 2،2 ماہ کی سزائیں ہوئی تھیں۔