Your theme is not active, some feature may not work. Buy a valid license from stylothemes.com

سندھ سے سینٹ کی خالی جنرل نشست پر نثار کھوڑو نے اپنے کاغذات نامزدگی الیکشن کمیشن میں جمع کرادیئے

کراچی(نیوز ڈیسک) پی پی سندھ کے صدر نثار کھوڑو نے سندھ سے سینٹ کی خالی جنرل نشست پر اپنے کاغذات نامزدگی الیکشن کمیشن میں جمع کرادئے۔ جبکے پی پی پی رہنما سرفراز راجڑ اور عاجز دھامراہ نے نثار کھوڑو کے کورنگ امیدوار کے طور پر بھی اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرائے۔ واضع رہے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد فیصل واوڈا نے سینیٹ کی رکنیت سے استعفی دیا تھا اور یہ نشست خالی ہوئی تھی۔ نثار کھوڑو کے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے موقعے پر وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ، سید قائم علی شاہ، صوبائی وزراء سعید غنی، مکیش کمار چاولہ، سینیٹر وقار مھدی اور دیگر ایم پی ایز موجود تھے۔ اس موقعے پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے نثار کھوڑو نے کہا کے سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد سینیٹ کی نشست خالی ہوئی جس کے لئے کاغذات نامزدگی جمع کروائے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ایم کیو ایم پاکستان کو نہ ناراض کرنا چاھتے ہیں نہ ان سے الگ کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کے ایم کیو ایم کی احتجاجی ریلی الیکشن کمیشن کے خلاف ہوگی کیوں کے حلقہ بندیاں کرانا سندھ حکومت کا نہیں الیکشن کمیشن کا اختیار ہے۔ نثار کھوڑو نے مزید کہا کے بلدیاتی انتخابی مھم کے سلسلے میں ریلیاں نکالنا اور جلسے کرنا ہر سیاسی جماعت کا حق ہے تاہم پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم پاکستان نے اپنے اپنے پلیٹ فارم سے بلدیاتی انتخابات میں اپنے اپنے امیدوار کھڑے کئے ہیں اور جس جماعت کی زیادہ نشستیں ہونگی اس کا میئر آئے گا۔ انہوں نے کہا کے ایم کیو ایم کا اگر ٹاؤن کی حلقہ بندی پر اعتراض ہے تو ہم نے تو کراچی میں ٹاؤن جا تعداد بڑھا کر 25 کردیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کے ایم کیو ایم نے حلقہ بندیوں پر اعتراض تاخیر سے داخل کئیاور عدالت نے ان کی درخواست رد کی تھی۔ انہوں نے کہا کے ہم چاہتے ہیں کے بلدیاتی الیکشن ہو جائیں صرف ایک دو حلقوں کے این شاہ اور میہڑ میں سیلاب کی وجہ سے انتخابات ملتوی کرنے کی درخواست کر رہے ہیں باقی بلدیاتی انتخابات کے لئے ماحول سازگار ہے۔