پیٹرول کی قیمت میں ممکنہ اضافہ، پمپس اچانک بند، عوام رُل گئے

لاہور، راولپنڈی(نیوزڈیسک) پٹرولیم مصنوعات میں ممکنہ اضافے کی اطلاعات پر راولپنڈی اور لاہور میں مالکان نے متعدد پٹرول پمپس بند کردئیے گئے۔ادھر پٹرول کی تلاش میں پھرنے والے شہریوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ایسے موقع پرست پٹرول پمپس مالکان کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے۔دوسری جانب لاہور شہر میں پمپ بند ہونے کی وجہ سے شہری پریشان ہیں جبکہ جو پیٹرول پمپ کھلے ہیں وہاں مالکان نے پمپ کھولے ہوئے ہیں وہ دو ہزار روپے سے زائد کا پیٹرول فراہم نہیں کررہے۔ بعض پیڑول مالکان نے سپلائی یاریٹ بڑھنے کے پیش نظر پمپ بند کردیئے۔

جس کی وجہ سے شہریوں کو پیٹرول کے حصول میں شدید پریشانی کا سامنا ہے۔راولپنڈی شہر کی اہم شاہراہوں مری روڈ، مال روڈ، ائیرپورٹ پر متعدد پٹرول پمپس کو مالکان نے بند کردیا ہے جبکہ پٹرول کی تلاش میں شہری مارے مارے پھر رہے ہیں، بند پمپس پر موجود عملے نے بتایا کہ پٹرول کی قیمتوں میں ممکنہ اضافے کو دیکھتے ہوئے پٹرول پمپس کو مالکان نے بند کیا ہے۔

پیٹرول کم دینے پر پمپ انتطامیہ اور گاہکوں کے درمیان تکرار ہوئی جبکہ اس تمام تر صورتحال یے باوجود ضلعی انتظامیہ لاہور خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں اور انتظامیہ کی جانب سے کوئی اقدامات نظر نہیں آرہے جبکہ شہری پمپوں پر پیٹرول کے حصول کے لیے دھکے کھارہے ہیں۔دوسری جانب گوجرانوالہ، شیخوپورہ، خانیوال اور ساہیوال میں بھی پیٹرول نایاب ہوگیا ہے۔شہریوں کا کہنا ہے کہ کہنا ہے کہ عوام کیلیے ہر چیز کا حصول مشکل ہوگیا ہے، پیٹرول مہنگا ہونے کے باوجود ہمیں مل نہیں رہا۔

ہمارا وٹس ایپ چینل جوائن کریں اور ہر وقت باخبر رہیں

WhatsApp Channel