ٹوئٹر نے فیس بک ، انسٹاگرام ودیگر سوشل سائٹس کے لنک پوسٹ کرنے پر پابندی کے فیصلہ سے یوٹرن لے لیا

واشنگٹن(نیوز ڈیسک)ٹوئٹر نے فیس بک اور انسٹاگرام کے لنک پوسٹ کرنے پر پابندی کے فیصلہ سے یوٹرن لے لیا۔گزشتہ شبہ شب ٹوئٹر کی جانب سے نئی پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے کہا گیا تھا کہ جو اکاؤنٹس فیس بک، انسٹاگرام اور دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کے لنکس اور یوزر نیم کو پروموٹ کرتے ہیں، انہیں اب اس کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ مگر صارفین کے شدید احتجاج کے باعث چند گھنٹوں بعد ہی ٹوئٹر کی جانب سے پالیسی پر یوٹرن لیا گیا۔صارفین کی تنقید کے بعد ٹوئٹر نے اس بلاگ پوسٹ کو ہی ڈیلیٹ کردیا جس میں پالیسی کا اعلان کیا گیا تھا۔اسی طرح ٹوئٹر سپورٹ اکاؤنٹ کے ٹوئٹ تھریڈ کو بھی ڈیلیٹ کردیا گیا جس میں پالیسی کا اعلان ہوا تھا۔کمپنی کے ایک اور اکاؤنٹ ٹوئٹر سیفٹی کی جانب سے اب ایک پول کرایا جارہا ہے جس میں صارفین سے پوچھا گیا ہے کہ دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کی تشہیر کے لیے اکاؤنٹس کے استعمال کی روک تھام کے لیے کمپنی پالیسی ہونی چاہیے یا نہیں۔یہ پول پاکستانی وقت کے مطابق 20 دسمبر کی سطح 7 بجے ختم ہوگا۔یہ پول اس وقت کرایا جارہا ہے جب ٹوئٹر کے سی ای او ایلون مسک کی جانب سے بھی ذاتی اکاؤنٹ پر عہدہ چھوڑنے یا نہ چھوڑنے کے حوالے سے پول کرایا جارہا ہے۔اس پول میں 57 فیصد سے زیادہ افراد نے ایلون مسک کو ٹوئٹر کے سی ای او کا عہدہ چھوڑنے کا کہا ہے۔