چمن، افغان بارڈر فورسزکی اندھا دھند فائرنگ اورقیمتی جانوں کے ضیاع پر پاکستن کی مذمت،واقع کوبرادرانہ تعلقات کے منافی قرار دیدیا

اسلام آباد (نیوزڈیسک) پاکستان نے افغان بارڈر فورسز کی جانب سے سرحدی علاقے چمن میں بلااشتعال فائرنگ اور انسانی جانوں کے ضیاع کی پرزور مذمت کرتے ہوئے واقع کو برادرانہ ممالک تعلقات کے منافی قرار دیدیا۔اسلام آباد: دفتر خارجہ نے افغان حکام سے چمن کی شہری آبادی پر افغان بارڈر فورسز کی بلااشتعال اور اندھا دھند فائرنگ کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کردیا۔ پیر کو تفصیلات کے مطابق دفتر خارجہ کی جانب سے پاکستان کے سرحدی علاقے چمن میں شہری آبادی پر افغان بارڈر فورسز کی اندھا دھند فائرنگ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے افسوس ناک واقعات دونوں ممالک کے درمیان برادرانہ تعلقات کے مطابق نہیں ہیں۔ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ افغان بارڈر فورسز کی فائرنگ کے نتیجے میں 6 پاکستانی شہری جاں بحق اور 17 زخمی ہوئے ہیں،سرحد پر شہریوں کی حفاظت کرنا دونوں فریقین کی ذمہ داری ہے، لہذا افغان حکام سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ذمہ داروں کے خلاف سخت ترین کارروائی کی جائے،دونوں ممالک کے متعلقہ حکام اس بات کو یقینی بنانے کے لیے رابطے میں ہیں کہ صورتحال مزید خراب نہ ہو۔

ہمارا وٹس ایپ چینل جوائن کریں اور ہر وقت باخبر رہیں

WhatsApp Channel