بلوچ ، سرکاری آٹے کی غیر منصفانہ تقسیم و قلت ،عوام شدید پریشانی میں مبتلا

بیٹھک اعوان آباد(نمائندہ خصوصی) آزادکشمیر کے علاقے بلوچ مرکز اور گردونواح کےعلاقوں کے سپلائی ڈپو میں آٹے کی غیر منصفانہ تقسیم و قلت اورعوام علاقہ کی شدید پریشانی کے پیش نظر سول سوسائٹی بلوچ کی جانب سے جو احتجاجی کال دی گی تھی اس کے ردعمل میں حکومتی اور محکمہ خوراک کے اعلی افسران پر مشتمل اعلی سطحی وفد نے سول سوسائٹی کے نمائدوں جن میں سردار کاشف شاھین ایڈوکیٹ ٹاؤن کونسلر بلوچ صوبیدار میجر عبدالرحمن صدرانجمن تاجران حاجی لطیف سردار محمد امین افتخار محمود ایڈوکیٹ اور چوہدری فضل الہی اور دیگر سے تفصیلی مولاقات کی اور یہ یقین دھانی کروائی کے ہمیں موقع دیں اور ہم اس منگل سے 25 توڑے فی ڈیلرکے حساب سے دیں گے اور فوتگی اور نیاز کی صورت میں دومن اضافی اٹا اس فیملی کو دیا جاے گا اور مورخہ 31 جنوری 2023 کو جو آٹا تقسیم ہو گا اس کی نگرانی محکمہ خوراک کے dfc اور دیگر افسران موقع جاکر کریں گے اور ڈیلرزسے مکمل ریکارڈ چیک کریں گے کے اٹا کیسے تقسیم ہوا جس کے پیش نظر کمیٹی نے افسران کو دو ہفتے کا ٹائم دیا کے عوام کو ریلف دیں ورنہ یہ عوام نہ ختم ہونے احتجاج شروع کرے گی جس سے حکومتی درودیوار ہل جائیں گے لہذا کمیٹی نے یہ فیصلہ کیا ہے کے یہ احتجاج دو ہفتے کیلئے موخر کیا جاتا ہے۔

ہمارا وٹس ایپ چینل جوائن کریں اور ہر وقت باخبر رہیں

WhatsApp Channel