ایران میں حجاب کے خلاف مظاہرہ کرنیوالے مزید 2افرادکوپھانسی دیدی گئی

تہران (نیوزڈیسک)ایران میں حجاب کے معاملے پر زیر حراست لڑکی مہسا امینی کی موت کے خلاف مظاہروں کے دوران پیرا ملٹری فورس کے اہلکار کے قتل کے جرم میں 2 افراد کو پھانسی دے دی گئی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایران میں جاری مظاہروں کے الزام میں موت کی سزا پانے والوں کی تعداد 4 ہوگئی ہے۔ایرانی عدلیہ کے مطابق 22 سالہ محمد مہدی کرامی اور 20 سالہ محمد حسینی کو سیکیورٹی اہلکار کے قتل کے جرم میں آج صبح پھانسی دی گئی۔ایران میں مہسا امینی کی موت کے خلاف مظاہروں میں گرفتار افراد میں سے 2 افراد کو گزشتہ سال دسمبر میں پھانسی دی گئی تھی۔ایران میں جاری مظاہروں کے الزام میں ہزاروں افراد گرفتار ہیں، جن میں سے اب تک 14 افراد کو موت کی سزا سنائی جاچکی ہے۔