یکم مارچ سے پٹرولیم قیمتوں میں 3 روپے 44 پیسے فی لیٹر اضافے کا امکان

اسلام آباد(نیوزڈیسک)یکم مارچ سے پیٹرول کی قیمتوں میں اضافے کا امکان ۔قیمتوں کی مجوزہ ایڈجسٹمنٹ کا حتمی فیصلہ وزارت خزانہ پر منحصر ہے۔آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی تجویز پیش کرتے ہوئے ورکنگ پیپر حکومت کو جمع کرادیا۔ تیل کی بڑھتی ہوئی عالمی قیمتوں اور ممکنہ آمدنی میں کمی کے خدشات کے درمیان سامنے آیا۔

ذرائع کے مطابق ریگولیٹری اتھارٹی نے پیٹرول کی قیمت میں 3 روپے 44 پیسے فی لیٹر اضافے کی تجویز دی ہے۔ اس سے ایکس ریفائنری قیمت 192.17روپے فی لیٹر سے بڑھ کر61 .195 روپے فی لیٹر ہو جائے گی۔اس تجویز میں ڈیزل کے لیے 1 روپے فی لیٹر کا ممکنہ اضافہ بھی شامل ہے، جس سے ریفائنری کی سابقہ قیمت 206.75 روپے فی لیٹر سے بڑھا کر207.75 روپے فی لیٹر کر دی گئی ہے۔مٹی کے تیل کی قیمتوں میں بھی 1 روپے فی لیٹر کا اضافہ ہو سکتا ہے، سابق ریفائنری قیمت ممکنہ طور پر 177.70 روپے فی لیٹر سے بڑھ کر 178.52روپے فی لیٹر ہو سکتی ہے۔

مزید یہ بھی پڑھیں: پاور سیکٹرکی نجکاری، بجلی ترسیل کیلئے ترکی ماڈل لانے کی سمری تیار

تاہم اوگرا نے لائٹ ڈیزل آئل (ایل ڈی او) کی قیمت میں غیر متعینہ رقم کی کمی کی تجویز دی ہے۔یہ نوٹ کرنا ضروری ہے کہ یہ محض تجاویز ہیں، اور قیمتوں میں ایڈجسٹمنٹ کے بارے میں حتمی فیصلہ وزارت خزانہ پر منحصر ہے۔ وزارت حتمی فیصلہ کرنے سے پہلے عالمی مارکیٹ کے رجحانات، محصولات کی ضروریات اور صارفین پر ممکنہ اثرات سمیت مختلف عوامل پر غور کرے گی۔